Pakistani Adult Actress Shameful Statement

Here is the Nadia Ali Pakistani Adult Actress Shameful Statement. Nadia Ali is a Pakistani-American erotic dancer. She acted in pornography from 2015 to 2016, receiving attention for being a practicing Muslim in that industry.

She was the first of her Pakistani-American family to be born in the United States, and grew up in New Jersey. She felt isolated by her family’s conservatism, although she did not wear a hijab.

Nadia was raised as a Muslim, In a July 2016 interview with the refinery29 she stated that still identifies herself as a “practicing Muslim”, and that in between her work in escorting and porn, she still prays two or three times a day.

پاکستانی نژاد خاتون نادیہ علی کا کہنا ہے کہ وہ فحش فلموں میں کام کرنے کو اپنے عقیدے اور کلچر سے متصادم نہیں سمجھتیں اور اب حجاب پہن کر فحش فلموں میں کام کریںگی۔ ۔

جریدے براڈلی کو دئیے گئے ایک انٹرویو میں نادیہ علی کا کہنا تھا کہ حجاب پہن کر کیمرے کے سامنے فحش حرکات کرنے میں قطعاً کوئی حرج نہیں۔ میں مسلمان ہوں اور پاکستانی ہوں اور اپنے مذہب اور کلچر کو اپنے کام کے ساتھ یکجا رکھنا چاہتی ہوں۔ اس سے کوئی فرق نہیں پڑتا کہ آپ کا عقیدہ اور قومیت کیا ہے۔ آپ کوئی بھی کام کرتے ہوں اس کے ساتھ اپنے عقیدے پر قائم رہ سکتے ہیں۔

میں مشرق وسطیٰ کی خواتین کے لئے بھی ایک پلیٹ فارم کھولنا چاہتی ہوں ۔تاکہ انہیں یہ پیغام دے سکوں کہ جنسی آزادی غیر فطری بات نہیں ہے۔ میں سب خواتین سے کہنا چاہتی ہوں کہ وہ اپنی جبلت کو قبول کریں۔ آپ کا کلچر اور مذہب کچھ بھی ہو، آپ جنسی آزادی کا مکمل حق رکھتی ہیں۔ اخلاق باختہ اداکارہ نے اپنے گمراہ کن نظریے پر اصرار جاری رکھتے ہوئے کہا، میں ایک باعمل مسلمان ہوں، میں صبح اٹھ کر نماز پڑھتی ہوں اور رات کو رقص کرتی ہوں۔ کچھ لوگ سمجھتے ہیں کہ یہ حقیقت کے دو رخ ہیں جو ایک ساتھ

نہیں چل سکتے۔ میں ان لوگوںکو بتانا چاہتی ہوں کہ یہ دونوں چیزیں ایک ساتھ چل سکتی ہیں۔

Source

loading...